ہیپاٹئٹس سی کس طرح ہیپاٹئٹس اے اور بی سے مختلف ہے؟

ہیپاٹئٹس اے اور بی کے حفاظتی ٹیکے موجود ھیں لیکن ہیپاٹئٹس سی کا نہیں

ہیپاٹئٹس اے اس وقت لگتی ہے جب فضلاتی مواد آلودہ پانی، خوراک یا دیگر مشروبات کے ذریعے نگل لیا جاۓ- ہیپاٹئٹس اے کا کوئی علاج نہیں – عام طور پر یہ بیماری خود بخود دور ھو جاتی ہے اور جسم آیندہ کے لیے بیماری سے محفوظ ھو جاتا ھے-

ہیپاٹئٹس بی اس وقت پھیلتی ہے جب کسی ایسے شخص کا خون یا جنسی عمل میں پیدا ھونے والی رطوبتیں، جسے وائرس لگ چکا ھو دوسرے شخص کے خون سے رابطے میں آ جاۓ- مثال کے طور پر وائرس غیر محفوظ جنسی عمل (کونڈم کے بغیر) کے ذریعے منتقل ہو سکتا ہے یا پھر دوران پیدائش بچے کو لگ سکتا ہے- یہ دنیا میں سب سے زیادہ پائی جانے والی بیماری ہے اور آسانی سے ایک شخص سے دوسرے کو لگ جاتی ہے- زیادہ تر افراد جنہیں ہیپاٹئٹس بی وائرس لگ جاۓ خود بخود اس سے نجات حاصل کر لیتے ہیں اور آیندہ کے لیے بیماری سے محفوظ ھو جاتے ہیں- کچھ لوگوں کو دائمی انفیکشن ھو جاتی ہے جس پر علاج کے ذریعے قابو تو پایا جاسکتا ہے لیکن اسے مکمل طور پر ختم نہیں کیا جا سکتا-

ہیپاٹئٹس اے اور بی کے حفاظتی ٹیکے کینیڈا میں بڑے پیمانے پر میسر ہیں- آپ اپنے ڈاکٹر یا نرس سے ٹیکا لگوانے کے بارے میں پوچھ سکتے ہیں- اونٹیریو میں رہنے والے کافی افراد یہ ٹیکا مفت لگوا سکتے ہیں-