ٹسٹ کروائیں-

صرف ٹسٹ کروا کر ھی پتہ چل سکتا ہے کہ آپ کو ہیپاٹئٹس سی ہے یا نہیں-

 ہیپاٹئٹس سی کا پتہ چلانے کے لیۓ دو ٹسٹ کروانے پڑتے ہیں

پہلا ٹسٹ- ہیپاٹئٹس سی اینٹی باڈی ٹسٹ

یہ ٹسٹ خون میں اینٹی باڈیز کو تلاش کرتا ہے جو جسم میں ہیپاٹئٹس سی وائرس کا سامنا کرنے کے نتیجے میں پیدا ھوتی ہیں- وائرس کا سامنا کرنے کے بعد جسم کو اتنی اینٹی باڈیز پیدا کرنے میں جو ٹسٹ میں نظر آ سکیں چھ ہفتے سے چھ مہینے کا عرصہ لگ سکتا ہے - اگر کوئی شخص اپنے آپ یا علاج کے نتیجہ میں وائرس سے چھٹکارا حاصل کر بھی لیتا ہے تو بھی خون میں یہ اینٹی باڈیز ہمیشہ موجود رہیں گی- جسم میں اینٹی باڈیز کی موجودگی کا ھرگز یہ مطلب نہیں کہ کوئی شخص آگے وائرس منتقل کر سکتا ہے- یہ جاننے کہ لیے کہ خون میں وائرس موجود ہے یا نہیں ایک دوسرا ٹسٹ درکار ھوتا ہے-

دوسرا ٹسٹ – وائرس کا پتہ لگانے کا ٹسٹ

یہ ٹسٹ پی سی آر ٹسٹ، وائرس کی مقدار کا ٹسٹ یا پھر آر این اے ٹسٹ کہلاتا ہے- یہ ٹسٹ فعال (ایکٹو) وائرس کی موجودگی کا پتہ چلاتا ہے-اس ٹسٹ کے نتائج منفی ھونے کا مطلب ہے کہ آپ کو ہیپاٹئٹس سی نہیں ہے- اگر اس ٹسٹ کے نتائج مثبت آئیں تو اس کا مطلب ہے اس شخص میں وائرس موجود ہے اور وہ اسے آگے منتقل کر سکتا ہے-